جرمنی کے شاپنگ مال میں فائرنگ کا واقعہ, حیرت انگیز تفصیلات منظر عام پر آگئیں

germany-firing-case

جرمنی کے شاپنگ مال میں فائرنگ کا واقعہ, حیرت انگیز تفصیلات منظر عام پر آگئیں

جرمنی کے شاپنگ مال میں فائرنگ کا واقعہ حیرت انگیز تفصیلات منظر عام پر آگئیں

میونخ: گزشتہ روز جرمنی کے شاپنگ مال میں فائرنگ کر کے 10 افراد کو قتل کرنے والے ایرانی نژاد شہری سے متعلق انکشاف ہوا ہے کہ اس نے اسکول میں امتیازی سلوک کا نشانہ بنائے جانے کا بدلہ لیا۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی کے شہر میونخ کے شاپنگ مال میں 10 افراد کو موت کے گھاٹ اتارکرخود کشی کرنے والے شخص سے متعلق اہم انکشاف سامنے آیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ایرانی نژاد جرمن نوجوان کی شناخت علی سنبلی کے نام سے ہوئی ہے جسے اسکول میں برسوں امتیازی سلوک کا نشانہ بنایا جاتا رہا جس نے اسے بدلہ لینے پر مجبور کیا۔ ایرانی نژاد شہری نے اسکول کے زمانے میں امتیازی سلوک کا نشانہ بنانے والوں کو مفت کھانا کھلانے کے بہانے بلایا اور پھر ان پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔ علی سنبلی کے پاس نائن ایم ایم پستول اور 300 گولیاں تھیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ بھی جرمنی میں ایک شخص نے سینما گھر میں فائرنگ کر کے 50 افراد کو زخمی کر دیا تھا۔