تازہ تر ین
19-7-700x300

میٹرو منصوبے کے بعد ایک اور بڑے منصوبے کا اعلان

19-7-700x300

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وفاقی حکومت نے 4ارب 50کروڑ روپے کی لاگت سے 90ایکڑ اراضی پر محیط جدید سہولیات سے آراستہ جیل تعمیر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ،جیل میں 2ہزار قیدیوں کی گنجائش ہوگی ،مرد خواتین اور بچوں کےلئے الگ الگ بیرک بنائے جائیں گے ،جیل میں ہسپتال ،سکولز، کھیل کے میدان ، فیکٹری ،لائبریری ،مسجد ،اقلیتی عبادت خانے ،بنک شاپنگ سنٹر اور دیگر سہولیات فراہم کی جائیں گی۔آن لائن کو ملنے والی دستاویزات کے مطابق وفاقی حکومت نے اسلام آباد میں جدید سہولیات سے آراستہ جیل تعمیر کرنے کے منصوبے کی تیاری شروع کر دی ہے یہ جیل دارلحکومت کے سیکٹرH-16میں تعمیر کی جائے گی جس کےلئے وفاقی ترقیاتی ادارے سی ڈی اے سے 90 ایکڑ اراضی حاصل کر لی گئی ہے دستاویزات کے مطابق جیل کی تعمیر پر 4ارب 50کروڑ روپے کی لاگت آئے گی اور یہ منصوبہ اگلے دو سالوں میں مکمل کیا جائے گاجیل میں ابتدائی طو رپر 2ہزار قیدیوں کی گنجائش ہوگی جسے بعد میں 4ہزار قیدیوں تک لے جایا جائے گا جیل میں میں مرد خواتین اورنابالغ قیدیوں کےلئے الگ الگ بیرکس تعمیر کئے جائیں گے جیل کی تعمیر میں سنگ مرمر،ٹائل فلورنگ کا استعمال کیا جائے گا جبکہ دروازے اور کھڑکیوں میں ایلومینم لگایا جائے گا،دستاویز ات کے مطابق جیل میں قیدیوں کیلئے نیشنل اکیڈمی برائے پرسنز ایڈ منسٹریشن قائم کی جائے گی اس کے علاوہ اسپتال ، پلے گرا?نڈز ،ڈسپنسری ، لڑکوں اور لڑکیوں کیلئے اسکولز، لانڈری، لائبریری، مسجد، اقلیتوں کیلئے عبادت خانے ،پی سی او،اسٹاف کلب، فیکٹری ،پوسٹ آفس، بینک اور دکانوں سمیت دیگر جدید سہولیات بھی مہیا کی جائیں گی۔