تازہ تر ین
مغلیہ سلطنت کے سنہری دور کی یادگار

مغلیہ سلطنت کے سنہری دور کی یادگار

مغلیہ سلطنت کے سنہری دور کی یادگار

مغلیہ سلطنت کے سنہری دور کی یادگار

دریائے جمنا کے نزدیک موجود لال قلعہ مغلیہ سلطنت کے سنہری دور کی یادگار یے ۔اسے سترھویں صدی میں مغل بادشاہ شاہجہان نے تعمیر کرایا۔ اسی قلعہ کے دیوان خاص میں تخت طاؤس واقع ہےجہاں بیٹھ کر مغل بادشاہ شاہجہان ہندوستان کے طول و عرض پر حکومت کرتے تھے۔2007ء میں لال قلعہ کو ایک عالمی اثاثوں کے لیے اقوام متحدہ کی تنظیم میںبرائے ثقافت، یونیسکو کی فہرست میں بھی شامل کرلیا گیا۔
لال قلعے کے اندر پہنچنے کے بعد آپ چاہیں تو اپنے تخیل کے گھوڑے کو سرپٹ دوڑا سکتے ہیں۔ کیونکہ لال قلعہ آج در حقیقت ویسا نہیں رہا جیسا یہ شاہ جہاں کے دور میں تھا۔ مختلف ادوار میں، اس میں بہت سی تبدیلیاں آچکی ہیںبہت سی قدیم چیزیں موجود تو ہیں لیکن سیکروں سال کے دوران ان کی حالت بہت تبدیل یا خستہ ہو چکی ہے.